پائیدار ڈھانچہ جاتی اصلاحات سے پاکستان2025-30ء کے دوران7فیصد شرح نمو حاصل کرسکتا ہے، کنٹری ڈائریکٹر عالمی بینک

اسلام آباد ۔(ویب ڈیسک) سرمایہ کاری بالخصوص نجی شعبہ میں کی جانے والی سرمایہ کاری کی شرح میں دوگنا اضافہ اور پائیدار ڈھانچہ جاتی اصلاحات سے پاکستان2025-30ء کے دوران7فیصد شرح نمو حاصل کرسکتا ہے۔

ملک میں جاری اقتصادی استحکام اور ادارہ و ڈھانچہ جاتی اصلاحات کا عمل جاری ہے جس سے معیشت کی شرح نمو میں نمایاں اضافہ متوقع ہے۔

اپنے ایک بیان میں عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹر برائے پاکستان الانگھ پاچا میتھو نے کہا ہے کہ 2025-30 ء کے دوران معاشی شرح نمو میں7فیصد کے پائیدار اضافہ کیلئے پاکستان کو سرمایہ کاری کی شرح میں دوگنا اضافہ کرنا ہوگا اور بالخصوص نجی شعبہ کی سرمایہ کاری پر خصوصی توجہ دینا ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ گذشتہ20 سال کے دوران نجی شعبہ کی سرمایہ کاری کی شرح10فیصد رہی جس کو20 فیصد تک بڑھانا ہوگا۔ عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹر نے مزید کہا کہ 2047ء تک پاکستان بہترین متوسط آمدنی والے ممالک میں شامل ہوجائے گا اور اس کی معیشت کا حجم 2کھرب ڈالر سے تجاوز کرجائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی معاشی ترقی اور پائیدار شرح نمو کو یقینی بنانے کیلئے اصلاحات کا پروگرام جاری رکھنے کی ضرورت ہے اور اس میں 7 گنا تک اضافہ کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اصلاحات اور معاشی استحکام کے نتیجہ میں پاکستان کی فی کس آمدن5 گنا تک بڑھنے کا امکان ہے۔

ٹیگز

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
ہمارے ساتھ رابطہ کریں
Close
Close