سات پراپرٹیز کا حصول، بانی متحدہ سمیت 7 افراد کے خلاف درخواست دائر

لندن (آج تک) سات پراپرٹیز کا حصول، بانی متحدہ سمیت 7 افراد کے خلاف درخواست دائر۔

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان نے لندن میں پارٹی کی سات پراپرٹیز کے حصول کے لیے قانونی کارروائی شروع کر دی۔

ایم کیو ایم پاکستان نے لندن ہائی کورٹ میں بانی متحدہ الطاف حسین، بھائی اقبال حسین و دیگر 5 افراد کے خلاف درخواست دائر کر دی ہے۔

درخواست میں طارق میر، محمد انور، افتخار حسین، قاسم رضا اور یورو پراپرٹی ڈیولپمنٹ کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔

وکلا نے ایم کیو ایم کے وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق کی ہدایت پر مقدمہ دائر کیا ہے۔

وکلا کے دعویٰ کے مطابق لندن میں ایم کیو ایم پاکستان کی پراپرٹیز کی قیمت 10 ملین پاؤنڈز (2 ارب پاکستانی روپے سے زائد) سے بھی اوپر ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان نے جن پراپرٹیز پر دعویٰ دائر کیا ہے ان میں بانی متحدہ الطاف حسین کی رہائش گاہ بھی شامل ہے۔

وکلا نے دعویٰ کیا کہ برطانوی ٹرسٹ قوانین کے تحت ایم کیو ایم پاکستان ان پراپرٹیز کی قانونی طور پر حقدار ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے وکلاء نے دائر درخواست میں استدعا کی ہے کہ ٹرسٹ قوانین کے تحت پراپرٹیز کی فروخت اور ان کے کرایہ وغیرہ کی رقم پر حکم امتناع جاری کیا جائے۔

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
ہمارے ساتھ رابطہ کریں
Close
Close