انصاف کیلئے کوئی حد نہیں’ 5 اگست یوم سوگ ہوگا : عمر عبداللہ

سری نگر (آج تک) انصاف کیلئے کوئی حد نہیں’ 5 اگست یوم سوگ ہوگا : عمر عبداللہ۔

نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور جموں وکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے 5 اگست 2019 کو مرکزی حکومت کی جانب سے جموں و کشمیر سے متعلق لئے گئے فیصلہ جات کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ دفعہ 370،35A کی تنسیخ اور جموں وکشمیر کی تقسیم و تنظیم نو کو مرتے دم تک قبول نہیں کریں گے ۔ انہوں نے 5اگست کو ’یوم سوگ ‘ منانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جموں وکشمیر کے عوام کو انصاف فراہم کرنے کیلئے وہ کسی بھی حد تک جائیں گے۔ 
ایک سوال کے جواب میں عمر عبداللہ نے کہا ہم نے 5 اگست کے فیصلہ جات کو قبول نہیں کیا اور نہ ہی ہم کریں گے، لیکن اس کو واپس حاصل کرنے کے لئے ہم سمجھداری سے  لڑیں گے،نہ ہم سڑکوں پر آئیں گے اور نہ ہی ایسی صورتحال بنائیں گے جس سے انہیں کچلنے کا بہانہ ملے گا، ہمیں اس کے لئے ایک علیحدہ دروازہ کھٹکھٹانا ہوگا،کیا ہم ان سے اس کی بحالی کا مطالبہ کریں گے جو ہم سے 370 چھین چکے ہیں؟‘‘۔
ایک سوال کے جواب میں سابق وزیر اعلیٰ نے کہا ہمارے پاس ایک موقع تھا، لیکن ہم اسے کھو بیٹھے۔ ایسا ہوتا ہے، جب پرویز مشرف مسئلہ کشمیر حل کرنے کے لئے اقتدار میں تھے، تو کیا نئی دہلی کے لئے کوئی موقع موجود نہیں تھا؟ اب ہم ان لمحوں پر توبہ کر رہے ہیں۔ واجپائی اور مشرف، منموہن سنگھ اور مشرف دور وہ وقت تھا جب مسئلہ کشمیر حل ہو سکتا تھا،لیکن ایسا نہیں ہوا۔ یہ سچ ہے کہ ہمیں 1996 میں ایک موقع ملا تھا،جب 1996 میں ہم نے خود مختاری کی رپورٹ پیش کی، تب ہم اقتدار سے باہر ہوگئے تھے‘‘۔

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
ہمارے ساتھ رابطہ کریں
Close
Close