ترکی، جموں و کشمیر تنازعے کا سیاسی حل چاہتا ہے: ترجمان وزارت خارجہ

انقرہ (آج تک) ترکی، جموں و کشمیر تنازعے کا سیاسی حل چاہتا ہے: ترجمان وزارت خارجہ۔

ترکی نے  کہا ہے کہ بھارتی آئین کے تحت جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پر مبنی قانون کے اطلاق کو ایک سال مکمل ہونے کے بعد وہاں کی صورت حال مزید ابتر ہو چکی ہے۔

ترک وزارت خارجہ کےترجمان حامی اکسوئے نے اس قانون کے ایک سال مکمل ہونے پر اپنے بیان میں کہا کہ بھارتی آئین کے تحت جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پر مبنی قانون کے اطلاق کو ایک سال کا عرصۃ گزر چکا  ہے مگر  وہاں معمولات زندگی کی صورت حال مزید ابتر ہو چکی ہے جس نے علاقائی امن و استحکام کو بھی متاثر کیا ہے، ترکی اس تنازعے کے سیاسی حل کے لیے اقوام متحدہ کی طے شدہ  قرار دادوں پر عملدرآمد  کا متمنی ہے۔

واضح رہے کہ بھارت نے گزشتہ سال 5 اگست کو ایک آئینی ترمیم کے تحت جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرتے ہوئے علاقے کو دو مختلف حصوں میں تقسیم کر دیا تھا جس کے بعد بھارتی حفاظتی قوتوں نے آپریشن کے بہانے کشمیری عوام پر دباؤ بڑھاتےہوئے وہاں انٹرنیٹ،ٹیلیفون اور دیگر مواصلاتی ذرائع کی سہولیات کو  کم کرتےہوئے مقامی سیاسی  رہنماوں کی گرفتاری شروع کر دی تھی۔

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
ہمارے ساتھ رابطہ کریں
Close
Close